25 C
Lahore
Tuesday, October 19, 2021

ملکہ کی وفات سے پہلے ہی ان کی تدفین کے بعد ہونے والی تمام سرگرمیوں کا خلاصہ سامنے آ گیا

ملکہ الزبتھ کی اس وقت عمر 95 برس سے بھی زیادہ ہے۔ جو کہ بہت زیاہ لمبی عمر ہے۔ بے شک ملکہ الزبتھ کا شاہی خاندان میں ایک بہت اہم مقام ہے۔ مگر ان سے بھی اہم برطانوی حکوت کے لیے اصول اور قانون ہیں۔ اسی لیے برطانیہ میں ملکہ کی وفات سے پہلے ہی یہ طے کر لیا گیا ہے، کہ ملکہ کی وفات کے بعد کونسی سرگرمیاں سرانجام دی جائیں گی۔ اس اہم پلان سے برطانیہ کی ایک سوشل میڈیا کمپنی پولیٹیکو نے پوری دنیا کو آگاہ کیا ہے۔ ملکہ کی وفات کے حوالے سے کیے جانے والے اہم کام مندرجہ ذیل ہیں۔

:سیکیورٹی کے انتظامات

ملکہ الزبتھ اس وقت پورے شاہی خاندان ک سربراہ ہیں۔ اسی وجہ سے ان کے جنازے میں ان کے بہت سے چاہنے والے شرکت کریں گے۔ جن کی تعداد کو کنٹرول کرنے کے تمام انتظامات ملکہ کی وفات سے پہلے ہی کر لیے گئے ہیں۔ اس کے لیے ایک بہت بڑی سیکیورٹی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔ جس کی ذمہ داری یہ ہے کہ جب ملکہ وفات پا جائیں، تو اس وقت سیکیورٹی کی کوئی بھی رکاوٹ عین وقت پر پیش نہ آئے۔

:ملکہ الزبتھ کی تدفین

یہ پلان ایسا ہے کہ ملکہ کو ان کی وفات کے دس کے بعد دفنایا جائے گا۔ ان دس دنوں کے اندر اندر ملکہ کی تدفین کے انتظامات کا بندابست کیا جائے گا، اور ان پر عملدرامد یقینی بنایا جائے گا۔ ان تمام انتظامات کے لیے صرف دس دن ہی لازم ہوں گے۔ اس سے زیادہ دن منصوبت میں شامل نہیں ہیں۔ ان دس دنوں میں ہی شہزادہ چارلس پورے برطانیہ کا دورہ کریں گے، اور ملکہ کی تدفین کے انتظامات کو تشکیل دیں گے۔

:ملکہ کی وفات کی خبر

ملکہ کی شخصیت بہت اہم ہے۔ اسی لیے ان کی وفات کی خبر کا پتہ ہر ایک کو چلے۔ اس کے لیے بھی ایک اہم پلان تشکیل دیا گیا ہے۔ ملکہ کے دفتر میں جو لوگ کام کرتے ہیں، انہیں ملکہ کی وفات کے بارے میں بتانے کا طریقہ کچھ یوں ہو گا۔ کہ آپ کو ملکہ کی وفات کی خبر دیتے ہوئے چوکنا کیا جاتا ہے، کہ ملکہ کی آخری رسومات کی تیاریاں شروع کر دی جائیں۔ اس کے علاوہ برطانیہ کے وزیر اور اعلیٰ افسران کو ملکہ کی موت کی خبر، کچھ ایسے طریقے سے دی جائے گی کہ۔

انتہائی محترم جناب، بہت دکھ کے ساتھ آپ کو یہ پتا ہونا چاہیئے۔ اب ملکہ الزبتھ ہمارے ساتھ اس دنیا میں موجود نہیں ہیں۔ اسی کے ساتھ ساتھ اس ٹیکسٹ کے ساتھ ملکہ کی تاریخِ وفات بھی تحریر کی جائے گی۔

پھر برطانیہ کے شہریوں کو اس بات کے بارے میں خبروں کے ذریعے اطلاح دی جائے گی۔ دراصل برطانیہ کے سرکاری افسران کو سوشل میڈیا چلانے کی اجازت نہیں ہے۔ لہذاً اس خبر سے سرکاری طور پر ہی سب کو آگاہ کیا جائے گا۔

ان تمام منصوبوں و دیکھتے ہوئے آپ اس بات کا اندازہ لگا سکتے ہیں، برطانوی حکومت اپنے اصولوں اور قوانین پر عمل سختی سے کرتی ہے اور کرواتی بھی ہے۔ اور وہ چاہے عام لمحہ ہو یا پھر خاص لمحہ ہو۔ وہ اپنی طرف سے تمام انتظامات پہلے سے ہی کر کے رکھتے ہیں۔

ملکہ الزبتھ کی اس وقت عمر 95 برس سے بھی زیادہ ہے۔ جو کہ بہت زیاہ لمبی عمر ہے۔ بے شک ملکہ الزبتھ کا شاہی خاندان میں ایک بہت اہم مقام ہے۔ مگر ان سے بھی اہم برطانوی حکوت کے لیے اصول اور قانون ہیں۔ اسی لیے برطانیہ میں ملکہ کی وفات سے پہلے ہی یہ طے کر لیا گیا ہے، کہ ملکہ کی وفات کے بعد کونسی سرگرمیاں سرانجام دی جائیں گی۔ اس اہم پلان سے برطانیہ کی ایک سوشل میڈیا کمپنی پولیٹیکو نے پوری دنیا کو آگاہ کیا ہے۔ ملکہ کی وفات کے حوالے سے کیے جانے والے اہم کام مندرجہ ذیل ہیں۔

:سیکیورٹی کے انتظامات

ملکہ الزبتھ اس وقت پورے شاہی خاندان ک سربراہ ہیں۔ اسی وجہ سے ان کے جنازے میں ان کے بہت سے چاہنے والے شرکت کریں گے۔ جن کی تعداد کو کنٹرول کرنے کے تمام انتظامات ملکہ کی وفات سے پہلے ہی کر لیے گئے ہیں۔ اس کے لیے ایک بہت بڑی سیکیورٹی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔ جس کی ذمہ داری یہ ہے کہ جب ملکہ وفات پا جائیں، تو اس وقت سیکیورٹی کی کوئی بھی رکاوٹ عین وقت پر پیش نہ آئے۔

:ملکہ الزبتھ کی تدفین

یہ پلان ایسا ہے کہ ملکہ کو ان کی وفات کے دس کے بعد دفنایا جائے گا۔ ان دس دنوں کے اندر اندر ملکہ کی تدفین کے انتظامات کا بندابست کیا جائے گا، اور ان پر عملدرامد یقینی بنایا جائے گا۔ ان تمام انتظامات کے لیے صرف دس دن ہی لازم ہوں گے۔ اس سے زیادہ دن منصوبت میں شامل نہیں ہیں۔ ان دس دنوں میں ہی شہزادہ چارلس پورے برطانیہ کا دورہ کریں گے، اور ملکہ کی تدفین کے انتظامات کو تشکیل دیں گے۔

:ملکہ کی وفات کی خبر

ملکہ کی شخصیت بہت اہم ہے۔ اسی لیے ان کی وفات کی خبر کا پتہ ہر ایک کو چلے۔ اس کے لیے بھی ایک اہم پلان تشکیل دیا گیا ہے۔ ملکہ کے دفتر میں جو لوگ کام کرتے ہیں، انہیں ملکہ کی وفات کے بارے میں بتانے کا طریقہ کچھ یوں ہو گا۔ کہ آپ کو ملکہ کی وفات کی خبر دیتے ہوئے چوکنا کیا جاتا ہے، کہ ملکہ کی آخری رسومات کی تیاریاں شروع کر دی جائیں۔ اس کے علاوہ برطانیہ کے وزیر اور اعلیٰ افسران کو ملکہ کی موت کی خبر، کچھ ایسے طریقے سے دی جائے گی کہ۔

انتہائی محترم جناب، بہت دکھ کے ساتھ آپ کو یہ پتا ہونا چاہیئے۔ اب ملکہ الزبتھ ہمارے ساتھ اس دنیا میں موجود نہیں ہیں۔ اسی کے ساتھ ساتھ اس ٹیکسٹ کے ساتھ ملکہ کی تاریخِ وفات بھی تحریر کی جائے گی۔

پھر برطانیہ کے شہریوں کو اس بات کے بارے میں خبروں کے ذریعے اطلاح دی جائے گی۔ دراصل برطانیہ کے سرکاری افسران کو سوشل میڈیا چلانے کی اجازت نہیں ہے۔ لہذاً اس خبر سے سرکاری طور پر ہی سب کو آگاہ کیا جائے گا۔

ان تمام منصوبوں و دیکھتے ہوئے آپ اس بات کا اندازہ لگا سکتے ہیں، برطانوی حکومت اپنے اصولوں اور قوانین پر عمل سختی سے کرتی ہے اور کرواتی بھی ہے۔ اور وہ چاہے عام لمحہ ہو یا پھر خاص لمحہ ہو۔ وہ اپنی طرف سے تمام انتظامات پہلے سے ہی کر کے رکھتے ہیں۔

ملکہ الزبتھ کی اس وقت عمر 95 برس سے بھی زیادہ ہے۔ جو کہ بہت زیاہ لمبی عمر ہے۔ بے شک ملکہ الزبتھ کا شاہی خاندان میں ایک بہت اہم مقام ہے۔ مگر ان سے بھی اہم برطانوی حکوت کے لیے اصول اور قانون ہیں۔ اسی لیے برطانیہ میں ملکہ کی وفات سے پہلے ہی یہ طے کر لیا گیا ہے، کہ ملکہ کی وفات کے بعد کونسی سرگرمیاں سرانجام دی جائیں گی۔ اس اہم پلان سے برطانیہ کی ایک سوشل میڈیا کمپنی پولیٹیکو نے پوری دنیا کو آگاہ کیا ہے۔ ملکہ کی وفات کے حوالے سے کیے جانے والے اہم کام مندرجہ ذیل ہیں۔

:سیکیورٹی کے انتظامات

ملکہ الزبتھ اس وقت پورے شاہی خاندان ک سربراہ ہیں۔ اسی وجہ سے ان کے جنازے میں ان کے بہت سے چاہنے والے شرکت کریں گے۔ جن کی تعداد کو کنٹرول کرنے کے تمام انتظامات ملکہ کی وفات سے پہلے ہی کر لیے گئے ہیں۔ اس کے لیے ایک بہت بڑی سیکیورٹی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔ جس کی ذمہ داری یہ ہے کہ جب ملکہ وفات پا جائیں، تو اس وقت سیکیورٹی کی کوئی بھی رکاوٹ عین وقت پر پیش نہ آئے۔

:ملکہ الزبتھ کی تدفین

یہ پلان ایسا ہے کہ ملکہ کو ان کی وفات کے دس کے بعد دفنایا جائے گا۔ ان دس دنوں کے اندر اندر ملکہ کی تدفین کے انتظامات کا بندابست کیا جائے گا، اور ان پر عملدرامد یقینی بنایا جائے گا۔ ان تمام انتظامات کے لیے صرف دس دن ہی لازم ہوں گے۔ اس سے زیادہ دن منصوبت میں شامل نہیں ہیں۔ ان دس دنوں میں ہی شہزادہ چارلس پورے برطانیہ کا دورہ کریں گے، اور ملکہ کی تدفین کے انتظامات کو تشکیل دیں گے۔

:ملکہ کی وفات کی خبر

ملکہ کی شخصیت بہت اہم ہے۔ اسی لیے ان کی وفات کی خبر کا پتہ ہر ایک کو چلے۔ اس کے لیے بھی ایک اہم پلان تشکیل دیا گیا ہے۔ ملکہ کے دفتر میں جو لوگ کام کرتے ہیں، انہیں ملکہ کی وفات کے بارے میں بتانے کا طریقہ کچھ یوں ہو گا۔ کہ آپ کو ملکہ کی وفات کی خبر دیتے ہوئے چوکنا کیا جاتا ہے، کہ ملکہ کی آخری رسومات کی تیاریاں شروع کر دی جائیں۔ اس کے علاوہ برطانیہ کے وزیر اور اعلیٰ افسران کو ملکہ کی موت کی خبر، کچھ ایسے طریقے سے دی جائے گی کہ۔

انتہائی محترم جناب، بہت دکھ کے ساتھ آپ کو یہ پتا ہونا چاہیئے۔ اب ملکہ الزبتھ ہمارے ساتھ اس دنیا میں موجود نہیں ہیں۔ اسی کے ساتھ ساتھ اس ٹیکسٹ کے ساتھ ملکہ کی تاریخِ وفات بھی تحریر کی جائے گی۔

پھر برطانیہ کے شہریوں کو اس بات کے بارے میں خبروں کے ذریعے اطلاح دی جائے گی۔ دراصل برطانیہ کے سرکاری افسران کو سوشل میڈیا چلانے کی اجازت نہیں ہے۔ لہذاً اس خبر سے سرکاری طور پر ہی سب کو آگاہ کیا جائے گا۔

ان تمام منصوبوں و دیکھتے ہوئے آپ اس بات کا اندازہ لگا سکتے ہیں، برطانوی حکومت اپنے اصولوں اور قوانین پر عمل سختی سے کرتی ہے اور کرواتی بھی ہے۔ اور وہ چاہے عام لمحہ ہو یا پھر خاص لمحہ ہو۔ وہ اپنی طرف سے تمام انتظامات پہلے سے ہی کر کے رکھتے ہیں۔

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,046FansLike
2,984FollowersFollow
18,400SubscribersSubscribe

Latest Articles