26 C
Lahore
Tuesday, October 19, 2021

آسٹریلین وزیراعظم کو گھر کے سامنے سے چلے جانے کا مشورہ، لیکن وزیراعظم پھر بھی خاموش

:مالک مکان کا وزیراعظم کو حکم


آسٹریلیا کا وزیراعظم میڈیا سے گفتگو کر رہا تھا، کہ سامنے والے گھر کا مالک گھر سے باہر نکل آیا۔ اس نے وزیراعظم سے مخاطب ہو کر کہا کہ مسٹر وزیراعظم ان نمائندوں کو میرے لان سے دور کریں۔ کیونکہ یہ میری گھاس پر کھڑے ہوئے ہیں۔ اسی وقت وزیراعظم نے اپنی گفتگو کو روکا اور میڈیا کے نمائندوں کو اس جگہ سے ہٹایا۔ اس پر مالک مکان عام الفاظ میں شکریہ ادا کر کے واپس اندر چلا گیا۔

:اگر یہ پاکستان میں ہوتا

اگر یہ واقع پاکستان میں پیش آتا، تو سب سے پہلے تمام پولیس ولے، ورکرز اور افسران کو جمع کیا جانا تھا۔ دوسرا یہ کہ پاکستان کا کوئی مالک مکان ہوتا، تو اس کی تو خوشی کی انتہا ہی نہیں ہونی تھی۔ کیونکہ وزیراعظم اس کے گھر کے آگے خطاب کر رہے تھے۔ اس کا تو پورے محلے میں ٹھاٹ باٹ بن جانا تھا۔ تیسرا یہ کہ اب تک تو اس آدمی کو اُٹھا بھی لیا جانا تھا، کہ تیری اتنی ہمت کہ تونے وزیراعظم کو یہ کہا تجھے اب ہم بتاتے ہیں، کہ وزیراعظم کی عزت کیسے کرتے ہیں۔۔۔۔لیکن پھر بھی پاکستان زندہ باد اور آسٹریلیا پائندہ آباد۔

The Australian PM was talking to the media, the owner of the front house came out and said, Mr . Prime Minister these people are standing on my grass, move them back. And the PM stopped the talk and pulled the media representatives back without caring about the Prime Minister of the country. He went back inside after thanking him. If it was Pakistan, first of all, the police and local small big representatives and workers officers would have been present in the whole area.

Secondly, the landlord would also be happy that there is a Prime Minister in front of my house.

Thirdly, who is still here? The man would have been taken away if you had this courage !! Still long live Pakistan, long live Australia

Courtesy of: https://www.facebook.com/MediaTop-401806473588888/

:مالک مکان کا وزیراعظم کو حکم


آسٹریلیا کا وزیراعظم میڈیا سے گفتگو کر رہا تھا، کہ سامنے والے گھر کا مالک گھر سے باہر نکل آیا۔ اس نے وزیراعظم سے مخاطب ہو کر کہا کہ مسٹر وزیراعظم ان نمائندوں کو میرے لان سے دور کریں۔ کیونکہ یہ میری گھاس پر کھڑے ہوئے ہیں۔ اسی وقت وزیراعظم نے اپنی گفتگو کو روکا اور میڈیا کے نمائندوں کو اس جگہ سے ہٹایا۔ اس پر مالک مکان عام الفاظ میں شکریہ ادا کر کے واپس اندر چلا گیا۔

:اگر یہ پاکستان میں ہوتا

اگر یہ واقع پاکستان میں پیش آتا، تو سب سے پہلے تمام پولیس ولے، ورکرز اور افسران کو جمع کیا جانا تھا۔ دوسرا یہ کہ پاکستان کا کوئی مالک مکان ہوتا، تو اس کی تو خوشی کی انتہا ہی نہیں ہونی تھی۔ کیونکہ وزیراعظم اس کے گھر کے آگے خطاب کر رہے تھے۔ اس کا تو پورے محلے میں ٹھاٹ باٹ بن جانا تھا۔ تیسرا یہ کہ اب تک تو اس آدمی کو اُٹھا بھی لیا جانا تھا، کہ تیری اتنی ہمت کہ تونے وزیراعظم کو یہ کہا تجھے اب ہم بتاتے ہیں، کہ وزیراعظم کی عزت کیسے کرتے ہیں۔۔۔۔لیکن پھر بھی پاکستان زندہ باد اور آسٹریلیا پائندہ آباد۔

The Australian PM was talking to the media, the owner of the front house came out and said, Mr . Prime Minister these people are standing on my grass, move them back. And the PM stopped the talk and pulled the media representatives back without caring about the Prime Minister of the country. He went back inside after thanking him. If it was Pakistan, first of all, the police and local small big representatives and workers officers would have been present in the whole area.

Secondly, the landlord would also be happy that there is a Prime Minister in front of my house.

Thirdly, who is still here? The man would have been taken away if you had this courage !! Still long live Pakistan, long live Australia

Courtesy of: https://www.facebook.com/MediaTop-401806473588888/

:مالک مکان کا وزیراعظم کو حکم


آسٹریلیا کا وزیراعظم میڈیا سے گفتگو کر رہا تھا، کہ سامنے والے گھر کا مالک گھر سے باہر نکل آیا۔ اس نے وزیراعظم سے مخاطب ہو کر کہا کہ مسٹر وزیراعظم ان نمائندوں کو میرے لان سے دور کریں۔ کیونکہ یہ میری گھاس پر کھڑے ہوئے ہیں۔ اسی وقت وزیراعظم نے اپنی گفتگو کو روکا اور میڈیا کے نمائندوں کو اس جگہ سے ہٹایا۔ اس پر مالک مکان عام الفاظ میں شکریہ ادا کر کے واپس اندر چلا گیا۔

:اگر یہ پاکستان میں ہوتا

اگر یہ واقع پاکستان میں پیش آتا، تو سب سے پہلے تمام پولیس ولے، ورکرز اور افسران کو جمع کیا جانا تھا۔ دوسرا یہ کہ پاکستان کا کوئی مالک مکان ہوتا، تو اس کی تو خوشی کی انتہا ہی نہیں ہونی تھی۔ کیونکہ وزیراعظم اس کے گھر کے آگے خطاب کر رہے تھے۔ اس کا تو پورے محلے میں ٹھاٹ باٹ بن جانا تھا۔ تیسرا یہ کہ اب تک تو اس آدمی کو اُٹھا بھی لیا جانا تھا، کہ تیری اتنی ہمت کہ تونے وزیراعظم کو یہ کہا تجھے اب ہم بتاتے ہیں، کہ وزیراعظم کی عزت کیسے کرتے ہیں۔۔۔۔لیکن پھر بھی پاکستان زندہ باد اور آسٹریلیا پائندہ آباد۔

The Australian PM was talking to the media, the owner of the front house came out and said, Mr . Prime Minister these people are standing on my grass, move them back. And the PM stopped the talk and pulled the media representatives back without caring about the Prime Minister of the country. He went back inside after thanking him. If it was Pakistan, first of all, the police and local small big representatives and workers officers would have been present in the whole area.

Secondly, the landlord would also be happy that there is a Prime Minister in front of my house.

Thirdly, who is still here? The man would have been taken away if you had this courage !! Still long live Pakistan, long live Australia

Courtesy of: https://www.facebook.com/MediaTop-401806473588888/

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,046FansLike
2,986FollowersFollow
18,400SubscribersSubscribe

Latest Articles