25.9 C
Lahore
Sunday, October 17, 2021

پرتگالیوں میں پائی جانے والی ایسی عادتیں، جو پوری دنیا کے کسی بھی ملک میں نہیں پائی جاتیں

پرتگال یورپ کا بہت قدیم ملک ہے۔ پرتگال کا نام سنتے ہی اس کے خوب صورت مناظر آنکھوں کے سامنے آجاتے ہیں۔ مگر ان مناظر کے علاوہ پرتگال میں بسنے والوں میں کچھ ایسی عادتیں بھی پائی جاتی ہیں۔ جن کے بارے میں ہر کوئی نہیں جانتا۔ وہ کون سی عادتیں ہیں، آئیں آپ کو بتاتے ہیں۔

:میٹھے میں انڈے کی زردی ضرور ہوتی ہے

پرتگالیوں کے ہاں کوئی بھی میٹھی چیز بغیر انڈے کی زردی کے نہیں ملتی۔ یہ اس لیے کہ وہ اپنے زیادہ تر کھانوں میں انڈے کی سفیدی کا استعمال کرتے ہیں، کھانے کے علاوہ وہ مشروبات میں بھی سفیدی کا استعمال کرتے ہیں۔ اس لیے زردی کو پھینکنا ان کے لیے بہت نقصان دہ ہوتا تھا۔ لہذاً انہوں نے میٹھی اشیا میں زردی کا استعمال شروع کر دیا۔

:رات کا کھانا دیر سے کھاتے ہیں

پرتگال کے زیادہ تر شہری رات کو 8 بجے کے بعد ڈنر کرنا پسند کرتے ہیں۔ کیونکہ لیٹ ڈنر کرنا انہیں بہت پسند ہے۔ یہاں تک کے وہاں کے ہوٹلوں میں بھی ڈنر رات کے 8 بجے کے بعد دیا جاتا ہے۔ اس سے پہلے ہوٹلز یا تو خالی ہوتے ہیں یا پھر بند۔

: ریاست ناموں کی لسٹ شائع کرتی ہے

پرتگالی ریاست بچوں کے ناموں کی لسٹ شائع کرتی ہے۔ جس میں جو نام نہیں رکھنے ہیں، وہ نمایاں ہوتے ہیں۔ اگر کوئی ماں باپ لسٹ کے علاوہ بچے کا نام رکھتے ہیں، تو ریاست پہلے ہی آگاہ کر دیتی ہے۔ اور اگر جنس کے مطابق بھی نام نہ رکھا ہو، تو ریاست شہری کو خبردار کر دیتی ہے۔

:چلتے پھرتے کھانا نہیں کھاتے

پرتگال کے علاوہ پورے یورپ میں چلتے پھرتے کھانا کھانا عام سی بات سمجھی جاتی ہے۔ مگر یورپ کے ملک میں چلتے پھرتے کھانا کھانا قدیم تہذیب کے خلاف سمجھا جاتا ہے۔ کھانا کھانے کا وقت ان کے لیے بہت مقدس ہوتا ہے، اسی لیے وہ کسی غیر ملکی کو چلتے پھرتے کھاتا دیکھ کر اسے بدتمیزی قرار دیتے ہیں۔

:کیلے کے چھلکے

کرسمس سے پہلے کی رات کو پرتگالی کیلے بہت زیادہ کھاتے ہیں۔ اگر اس رات کوئی غیر ملکی شہر میں سیر و تفریع کرے گا، تو لازمی ہے کہ وہ کیلے کے چھلکے سے پسل کر گرے گا۔ کیونکہ پورے شہر کی سڑکوں پر کیلے کے چھلکے گرے ہوتے ہیں۔

پرتگال یورپ کا بہت قدیم ملک ہے۔ پرتگال کا نام سنتے ہی اس کے خوب صورت مناظر آنکھوں کے سامنے آجاتے ہیں۔ مگر ان مناظر کے علاوہ پرتگال میں بسنے والوں میں کچھ ایسی عادتیں بھی پائی جاتی ہیں۔ جن کے بارے میں ہر کوئی نہیں جانتا۔ وہ کون سی عادتیں ہیں، آئیں آپ کو بتاتے ہیں۔

:میٹھے میں انڈے کی زردی ضرور ہوتی ہے

پرتگالیوں کے ہاں کوئی بھی میٹھی چیز بغیر انڈے کی زردی کے نہیں ملتی۔ یہ اس لیے کہ وہ اپنے زیادہ تر کھانوں میں انڈے کی سفیدی کا استعمال کرتے ہیں، کھانے کے علاوہ وہ مشروبات میں بھی سفیدی کا استعمال کرتے ہیں۔ اس لیے زردی کو پھینکنا ان کے لیے بہت نقصان دہ ہوتا تھا۔ لہذاً انہوں نے میٹھی اشیا میں زردی کا استعمال شروع کر دیا۔

:رات کا کھانا دیر سے کھاتے ہیں

پرتگال کے زیادہ تر شہری رات کو 8 بجے کے بعد ڈنر کرنا پسند کرتے ہیں۔ کیونکہ لیٹ ڈنر کرنا انہیں بہت پسند ہے۔ یہاں تک کے وہاں کے ہوٹلوں میں بھی ڈنر رات کے 8 بجے کے بعد دیا جاتا ہے۔ اس سے پہلے ہوٹلز یا تو خالی ہوتے ہیں یا پھر بند۔

: ریاست ناموں کی لسٹ شائع کرتی ہے

پرتگالی ریاست بچوں کے ناموں کی لسٹ شائع کرتی ہے۔ جس میں جو نام نہیں رکھنے ہیں، وہ نمایاں ہوتے ہیں۔ اگر کوئی ماں باپ لسٹ کے علاوہ بچے کا نام رکھتے ہیں، تو ریاست پہلے ہی آگاہ کر دیتی ہے۔ اور اگر جنس کے مطابق بھی نام نہ رکھا ہو، تو ریاست شہری کو خبردار کر دیتی ہے۔

:چلتے پھرتے کھانا نہیں کھاتے

پرتگال کے علاوہ پورے یورپ میں چلتے پھرتے کھانا کھانا عام سی بات سمجھی جاتی ہے۔ مگر یورپ کے ملک میں چلتے پھرتے کھانا کھانا قدیم تہذیب کے خلاف سمجھا جاتا ہے۔ کھانا کھانے کا وقت ان کے لیے بہت مقدس ہوتا ہے، اسی لیے وہ کسی غیر ملکی کو چلتے پھرتے کھاتا دیکھ کر اسے بدتمیزی قرار دیتے ہیں۔

:کیلے کے چھلکے

کرسمس سے پہلے کی رات کو پرتگالی کیلے بہت زیادہ کھاتے ہیں۔ اگر اس رات کوئی غیر ملکی شہر میں سیر و تفریع کرے گا، تو لازمی ہے کہ وہ کیلے کے چھلکے سے پسل کر گرے گا۔ کیونکہ پورے شہر کی سڑکوں پر کیلے کے چھلکے گرے ہوتے ہیں۔

پرتگال یورپ کا بہت قدیم ملک ہے۔ پرتگال کا نام سنتے ہی اس کے خوب صورت مناظر آنکھوں کے سامنے آجاتے ہیں۔ مگر ان مناظر کے علاوہ پرتگال میں بسنے والوں میں کچھ ایسی عادتیں بھی پائی جاتی ہیں۔ جن کے بارے میں ہر کوئی نہیں جانتا۔ وہ کون سی عادتیں ہیں، آئیں آپ کو بتاتے ہیں۔

:میٹھے میں انڈے کی زردی ضرور ہوتی ہے

پرتگالیوں کے ہاں کوئی بھی میٹھی چیز بغیر انڈے کی زردی کے نہیں ملتی۔ یہ اس لیے کہ وہ اپنے زیادہ تر کھانوں میں انڈے کی سفیدی کا استعمال کرتے ہیں، کھانے کے علاوہ وہ مشروبات میں بھی سفیدی کا استعمال کرتے ہیں۔ اس لیے زردی کو پھینکنا ان کے لیے بہت نقصان دہ ہوتا تھا۔ لہذاً انہوں نے میٹھی اشیا میں زردی کا استعمال شروع کر دیا۔

:رات کا کھانا دیر سے کھاتے ہیں

پرتگال کے زیادہ تر شہری رات کو 8 بجے کے بعد ڈنر کرنا پسند کرتے ہیں۔ کیونکہ لیٹ ڈنر کرنا انہیں بہت پسند ہے۔ یہاں تک کے وہاں کے ہوٹلوں میں بھی ڈنر رات کے 8 بجے کے بعد دیا جاتا ہے۔ اس سے پہلے ہوٹلز یا تو خالی ہوتے ہیں یا پھر بند۔

: ریاست ناموں کی لسٹ شائع کرتی ہے

پرتگالی ریاست بچوں کے ناموں کی لسٹ شائع کرتی ہے۔ جس میں جو نام نہیں رکھنے ہیں، وہ نمایاں ہوتے ہیں۔ اگر کوئی ماں باپ لسٹ کے علاوہ بچے کا نام رکھتے ہیں، تو ریاست پہلے ہی آگاہ کر دیتی ہے۔ اور اگر جنس کے مطابق بھی نام نہ رکھا ہو، تو ریاست شہری کو خبردار کر دیتی ہے۔

:چلتے پھرتے کھانا نہیں کھاتے

پرتگال کے علاوہ پورے یورپ میں چلتے پھرتے کھانا کھانا عام سی بات سمجھی جاتی ہے۔ مگر یورپ کے ملک میں چلتے پھرتے کھانا کھانا قدیم تہذیب کے خلاف سمجھا جاتا ہے۔ کھانا کھانے کا وقت ان کے لیے بہت مقدس ہوتا ہے، اسی لیے وہ کسی غیر ملکی کو چلتے پھرتے کھاتا دیکھ کر اسے بدتمیزی قرار دیتے ہیں۔

:کیلے کے چھلکے

کرسمس سے پہلے کی رات کو پرتگالی کیلے بہت زیادہ کھاتے ہیں۔ اگر اس رات کوئی غیر ملکی شہر میں سیر و تفریع کرے گا، تو لازمی ہے کہ وہ کیلے کے چھلکے سے پسل کر گرے گا۔ کیونکہ پورے شہر کی سڑکوں پر کیلے کے چھلکے گرے ہوتے ہیں۔

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,046FansLike
2,984FollowersFollow
18,400SubscribersSubscribe

Latest Articles