25 C
Lahore
Tuesday, October 19, 2021

اگر گاڑی پُرانی ہے اور پیٹرول کا خرچ زیادہ ہے، تو ان 5 طریقوں کو آزمائیں اور بے فکر ہو جائیں

بہت سے لوگ جب نئی گاڑی کو خریدتے ہیں، تو وہ گاڑی کا رنگ، ماڈل اور کمپنی سے زیادہ اس کی پیٹرول کی ایوریج کو دیکھتے ہیں۔ کیونکہ پیٹرول کی ایوریج سے ہی پتا چل جاتا ہے، کہ گاڑی کا ایک ماہ کو خرچ کتنا ہو گا۔ آج کے دور میں جو گاڑیاں آ رہی ہیں، ان کا تو پیٹرول کا خرچہ بہت کم ہے۔مگر پرانی گاڑیوں کا پیٹرول کا خرچہ نئی گاڑیوں سے کچھ زیادہ ہوتا ہے۔ گاڑی کے پیٹرول زیادہ خرچ ہونے کی بہت سی وجوہات ہو سکتی ہیں۔ مگر آج ہم آپ کو اس آرٹیکل میں پُرانی گاڑیوں کا فیول کنٹرول کرنے کے چند اہم اور آزمائے ہوئے طریقے بتائیں گے۔ جن کی مدد سے آپ اپنی پُرانی گاڑی کی فیول ایورج نئی گاڑی کے مطابق کر سکتے ہیں۔

:گاڑی کی ٹیوننگ باقاعدگی سے کروائیں

گاڑی کی ٹیوننگ ہر دو ماہ بعد کروا لینی چاہیئے۔ کیونکہ ٹیوننگ سے گاڑی کے انجن میں کچرہ وغیرہ نہیں رہتا۔ گاڑی کا انجن اپنی پوری طاقت سے چلتا ہے، اور انجن میں کوئی بھی مسئلہ نہ ہونے کی صورت میں پیٹرول کا خرچ بہت کم ہوتا ہے۔

:چڑھائی سے اترتے ہوئے انجن بند کر دیں

جب انڈرپاس میں گاڑی داخل ہوتی ہے، تو بہت سے ڈرائیور حضرات بریک کی مدد سے گاڑی کی اسپیڈ کو کم کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ جبکہ ایسا کرنے کی وجہ سے بھی گاڑی کا فیول زیادہ خرچ ہوتا ہے۔ اس سے بہتر ہے کہ آپ اپنی گاڑی کا انجن بند کر دیں۔ جب گاڑی انڈرپاس سے باہر نکلے تو انجن اسٹارٹ کر لیں۔ ایسا کرنے سے بھی گاڑی کے فیول کی ایوریج بہتر ہو سکتی ہے۔

:ائير کنڈیشن کا استعمال ترک کر کے

اگر آپ کے پاس ہزار سی سی کی پُرانی گاڑی ہے، تو گاڑی کا اے سی فیول کو بڑھانے میں بہت زیادہ منفی کردار ادا کرتا ہے۔ ایسی گاڑیوں میں اے سی تب چلائیں جب گاڑی کی اسپیڈ زیادہ ہو۔ کیونکہ پھر انجن پر زیادہ لوڈ نہیں ہو گا۔ گاڑی کا انجن گرم ہو گا، اور پیٹرول کم لگے گا۔ اگر گاڑی کی اسپیڈ کم ہو تو اے سی کو بند کر دیں۔ اگر ایسا نہیں کریں گے، تو گاڑی پیٹرول بہت زیادہ خرچ کرے گی۔

:گاڑی بڑے گئير پر جلد منتقل کرنا

اکثر گاڑی جب پہلے یا دوسرے گئیر میں ہوتی ہے، تو پیٹرول زیادہ خرچ کرتی ہے۔ اسی لیے اگر آپ کی گاڑی پُرانی ہے، تو اس کی اسپیڈ کو جلد سے جلد تیز کریں اور انجن کو بڑے گئیروں پر شفٹ کریں۔ یہ عمل کرنے سے گاڑی کا انجن جلدی گرم ہو گا، اور پیٹرول بھی کم استعمال ہو گا۔

:صبح کے وقت گاڑی کو اسٹارٹ کر کے چھوڑ دیں

بہت سی پُرانی گاڑیوں کا انجن رات بھر بند رہنے کی وجہ سے ٹھنڈا ہو جاتا ہے۔ اسی لیے اپنی پُرانی گاڑی کو روز صبع تھوڑی دیر تک اسٹارٹ رہنے دیں۔ ایسا کرنے سے گاڑی کا انجن اپنی عام حالت میں آ جائے گا۔ پھر آپ اپنی گاڑی کو بے فکر ہو کر چلا سکتے ہیں۔ اگر ٹھنڈی گاڑی کو ہی فوراً چلانا شروع کر دیں گے، تو پیٹرول کا خرچہ مزید بڑھ جائے گا۔

بہت سے لوگ جب نئی گاڑی کو خریدتے ہیں، تو وہ گاڑی کا رنگ، ماڈل اور کمپنی سے زیادہ اس کی پیٹرول کی ایوریج کو دیکھتے ہیں۔ کیونکہ پیٹرول کی ایوریج سے ہی پتا چل جاتا ہے، کہ گاڑی کا ایک ماہ کو خرچ کتنا ہو گا۔ آج کے دور میں جو گاڑیاں آ رہی ہیں، ان کا تو پیٹرول کا خرچہ بہت کم ہے۔مگر پرانی گاڑیوں کا پیٹرول کا خرچہ نئی گاڑیوں سے کچھ زیادہ ہوتا ہے۔ گاڑی کے پیٹرول زیادہ خرچ ہونے کی بہت سی وجوہات ہو سکتی ہیں۔ مگر آج ہم آپ کو اس آرٹیکل میں پُرانی گاڑیوں کا فیول کنٹرول کرنے کے چند اہم اور آزمائے ہوئے طریقے بتائیں گے۔ جن کی مدد سے آپ اپنی پُرانی گاڑی کی فیول ایورج نئی گاڑی کے مطابق کر سکتے ہیں۔

:گاڑی کی ٹیوننگ باقاعدگی سے کروائیں

گاڑی کی ٹیوننگ ہر دو ماہ بعد کروا لینی چاہیئے۔ کیونکہ ٹیوننگ سے گاڑی کے انجن میں کچرہ وغیرہ نہیں رہتا۔ گاڑی کا انجن اپنی پوری طاقت سے چلتا ہے، اور انجن میں کوئی بھی مسئلہ نہ ہونے کی صورت میں پیٹرول کا خرچ بہت کم ہوتا ہے۔

:چڑھائی سے اترتے ہوئے انجن بند کر دیں

جب انڈرپاس میں گاڑی داخل ہوتی ہے، تو بہت سے ڈرائیور حضرات بریک کی مدد سے گاڑی کی اسپیڈ کو کم کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ جبکہ ایسا کرنے کی وجہ سے بھی گاڑی کا فیول زیادہ خرچ ہوتا ہے۔ اس سے بہتر ہے کہ آپ اپنی گاڑی کا انجن بند کر دیں۔ جب گاڑی انڈرپاس سے باہر نکلے تو انجن اسٹارٹ کر لیں۔ ایسا کرنے سے بھی گاڑی کے فیول کی ایوریج بہتر ہو سکتی ہے۔

:ائير کنڈیشن کا استعمال ترک کر کے

اگر آپ کے پاس ہزار سی سی کی پُرانی گاڑی ہے، تو گاڑی کا اے سی فیول کو بڑھانے میں بہت زیادہ منفی کردار ادا کرتا ہے۔ ایسی گاڑیوں میں اے سی تب چلائیں جب گاڑی کی اسپیڈ زیادہ ہو۔ کیونکہ پھر انجن پر زیادہ لوڈ نہیں ہو گا۔ گاڑی کا انجن گرم ہو گا، اور پیٹرول کم لگے گا۔ اگر گاڑی کی اسپیڈ کم ہو تو اے سی کو بند کر دیں۔ اگر ایسا نہیں کریں گے، تو گاڑی پیٹرول بہت زیادہ خرچ کرے گی۔

:گاڑی بڑے گئير پر جلد منتقل کرنا

اکثر گاڑی جب پہلے یا دوسرے گئیر میں ہوتی ہے، تو پیٹرول زیادہ خرچ کرتی ہے۔ اسی لیے اگر آپ کی گاڑی پُرانی ہے، تو اس کی اسپیڈ کو جلد سے جلد تیز کریں اور انجن کو بڑے گئیروں پر شفٹ کریں۔ یہ عمل کرنے سے گاڑی کا انجن جلدی گرم ہو گا، اور پیٹرول بھی کم استعمال ہو گا۔

:صبح کے وقت گاڑی کو اسٹارٹ کر کے چھوڑ دیں

بہت سی پُرانی گاڑیوں کا انجن رات بھر بند رہنے کی وجہ سے ٹھنڈا ہو جاتا ہے۔ اسی لیے اپنی پُرانی گاڑی کو روز صبع تھوڑی دیر تک اسٹارٹ رہنے دیں۔ ایسا کرنے سے گاڑی کا انجن اپنی عام حالت میں آ جائے گا۔ پھر آپ اپنی گاڑی کو بے فکر ہو کر چلا سکتے ہیں۔ اگر ٹھنڈی گاڑی کو ہی فوراً چلانا شروع کر دیں گے، تو پیٹرول کا خرچہ مزید بڑھ جائے گا۔

بہت سے لوگ جب نئی گاڑی کو خریدتے ہیں، تو وہ گاڑی کا رنگ، ماڈل اور کمپنی سے زیادہ اس کی پیٹرول کی ایوریج کو دیکھتے ہیں۔ کیونکہ پیٹرول کی ایوریج سے ہی پتا چل جاتا ہے، کہ گاڑی کا ایک ماہ کو خرچ کتنا ہو گا۔ آج کے دور میں جو گاڑیاں آ رہی ہیں، ان کا تو پیٹرول کا خرچہ بہت کم ہے۔مگر پرانی گاڑیوں کا پیٹرول کا خرچہ نئی گاڑیوں سے کچھ زیادہ ہوتا ہے۔ گاڑی کے پیٹرول زیادہ خرچ ہونے کی بہت سی وجوہات ہو سکتی ہیں۔ مگر آج ہم آپ کو اس آرٹیکل میں پُرانی گاڑیوں کا فیول کنٹرول کرنے کے چند اہم اور آزمائے ہوئے طریقے بتائیں گے۔ جن کی مدد سے آپ اپنی پُرانی گاڑی کی فیول ایورج نئی گاڑی کے مطابق کر سکتے ہیں۔

:گاڑی کی ٹیوننگ باقاعدگی سے کروائیں

گاڑی کی ٹیوننگ ہر دو ماہ بعد کروا لینی چاہیئے۔ کیونکہ ٹیوننگ سے گاڑی کے انجن میں کچرہ وغیرہ نہیں رہتا۔ گاڑی کا انجن اپنی پوری طاقت سے چلتا ہے، اور انجن میں کوئی بھی مسئلہ نہ ہونے کی صورت میں پیٹرول کا خرچ بہت کم ہوتا ہے۔

:چڑھائی سے اترتے ہوئے انجن بند کر دیں

جب انڈرپاس میں گاڑی داخل ہوتی ہے، تو بہت سے ڈرائیور حضرات بریک کی مدد سے گاڑی کی اسپیڈ کو کم کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ جبکہ ایسا کرنے کی وجہ سے بھی گاڑی کا فیول زیادہ خرچ ہوتا ہے۔ اس سے بہتر ہے کہ آپ اپنی گاڑی کا انجن بند کر دیں۔ جب گاڑی انڈرپاس سے باہر نکلے تو انجن اسٹارٹ کر لیں۔ ایسا کرنے سے بھی گاڑی کے فیول کی ایوریج بہتر ہو سکتی ہے۔

:ائير کنڈیشن کا استعمال ترک کر کے

اگر آپ کے پاس ہزار سی سی کی پُرانی گاڑی ہے، تو گاڑی کا اے سی فیول کو بڑھانے میں بہت زیادہ منفی کردار ادا کرتا ہے۔ ایسی گاڑیوں میں اے سی تب چلائیں جب گاڑی کی اسپیڈ زیادہ ہو۔ کیونکہ پھر انجن پر زیادہ لوڈ نہیں ہو گا۔ گاڑی کا انجن گرم ہو گا، اور پیٹرول کم لگے گا۔ اگر گاڑی کی اسپیڈ کم ہو تو اے سی کو بند کر دیں۔ اگر ایسا نہیں کریں گے، تو گاڑی پیٹرول بہت زیادہ خرچ کرے گی۔

:گاڑی بڑے گئير پر جلد منتقل کرنا

اکثر گاڑی جب پہلے یا دوسرے گئیر میں ہوتی ہے، تو پیٹرول زیادہ خرچ کرتی ہے۔ اسی لیے اگر آپ کی گاڑی پُرانی ہے، تو اس کی اسپیڈ کو جلد سے جلد تیز کریں اور انجن کو بڑے گئیروں پر شفٹ کریں۔ یہ عمل کرنے سے گاڑی کا انجن جلدی گرم ہو گا، اور پیٹرول بھی کم استعمال ہو گا۔

:صبح کے وقت گاڑی کو اسٹارٹ کر کے چھوڑ دیں

بہت سی پُرانی گاڑیوں کا انجن رات بھر بند رہنے کی وجہ سے ٹھنڈا ہو جاتا ہے۔ اسی لیے اپنی پُرانی گاڑی کو روز صبع تھوڑی دیر تک اسٹارٹ رہنے دیں۔ ایسا کرنے سے گاڑی کا انجن اپنی عام حالت میں آ جائے گا۔ پھر آپ اپنی گاڑی کو بے فکر ہو کر چلا سکتے ہیں۔ اگر ٹھنڈی گاڑی کو ہی فوراً چلانا شروع کر دیں گے، تو پیٹرول کا خرچہ مزید بڑھ جائے گا۔

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,046FansLike
2,984FollowersFollow
18,400SubscribersSubscribe

Latest Articles