30 C
Lahore
Tuesday, October 19, 2021

کویت: موذن نے شارٹس پہن کر مسجد عبداللہ بن جعفر میں اذان دے دی

کویتی حکومت میں محکمہ اوقاف نے ایک موذن کو مسجد میں شارٹس پہن کر نماز دینے پر گرفتار کر لیا۔ اس موذن کے خلاف قانونی کاروائی بھی شروع کر دی گئی ہے۔ اسے مسجد کے موذن کے عہدے سے بھی معطل کر دیا گیا ہے۔

 عربی ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق محکمہ اوقاف کونسل کا کہنا ہے کہ مسجد عبداللہ بن جعفر میں موذن نے شارٹس پہن کر نماز دی ہے۔ جس کے باعث اسے اس کے عہدے سے معطل کر دیا گیا ہے۔ اس قصۓ کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر بھی وائرل کی گئی ہے۔ جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ موذن نامناسب لباس پہن کر مسجد میں اذان دے رہا ہے۔

جس علاقے میں مسجد ہے، وہاں کے رہائشیوں نے بھی اس بات کی گواہی دی ہے۔ ایک آدمی کا کہنا تھا کہ موذن نماز سے پہلے مسجد کے اسٹور روم میں صفائی ستھرائی کا کام کر رہا تھا۔ جیسے ہی نماز کا وقت ہوا موذن نے شارٹس پہن رکھے تھے۔ وہ اسی حالت میں نماز دینے کے لیے کھڑا ہو گیا۔

کویتی حکومت میں محکمہ اوقاف نے ایک موذن کو مسجد میں شارٹس پہن کر نماز دینے پر گرفتار کر لیا۔ اس موذن کے خلاف قانونی کاروائی بھی شروع کر دی گئی ہے۔ اسے مسجد کے موذن کے عہدے سے بھی معطل کر دیا گیا ہے۔

 عربی ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق محکمہ اوقاف کونسل کا کہنا ہے کہ مسجد عبداللہ بن جعفر میں موذن نے شارٹس پہن کر نماز دی ہے۔ جس کے باعث اسے اس کے عہدے سے معطل کر دیا گیا ہے۔ اس قصۓ کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر بھی وائرل کی گئی ہے۔ جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ موذن نامناسب لباس پہن کر مسجد میں اذان دے رہا ہے۔

جس علاقے میں مسجد ہے، وہاں کے رہائشیوں نے بھی اس بات کی گواہی دی ہے۔ ایک آدمی کا کہنا تھا کہ موذن نماز سے پہلے مسجد کے اسٹور روم میں صفائی ستھرائی کا کام کر رہا تھا۔ جیسے ہی نماز کا وقت ہوا موذن نے شارٹس پہن رکھے تھے۔ وہ اسی حالت میں نماز دینے کے لیے کھڑا ہو گیا۔

کویتی حکومت میں محکمہ اوقاف نے ایک موذن کو مسجد میں شارٹس پہن کر نماز دینے پر گرفتار کر لیا۔ اس موذن کے خلاف قانونی کاروائی بھی شروع کر دی گئی ہے۔ اسے مسجد کے موذن کے عہدے سے بھی معطل کر دیا گیا ہے۔

 عربی ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق محکمہ اوقاف کونسل کا کہنا ہے کہ مسجد عبداللہ بن جعفر میں موذن نے شارٹس پہن کر نماز دی ہے۔ جس کے باعث اسے اس کے عہدے سے معطل کر دیا گیا ہے۔ اس قصۓ کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر بھی وائرل کی گئی ہے۔ جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ موذن نامناسب لباس پہن کر مسجد میں اذان دے رہا ہے۔

جس علاقے میں مسجد ہے، وہاں کے رہائشیوں نے بھی اس بات کی گواہی دی ہے۔ ایک آدمی کا کہنا تھا کہ موذن نماز سے پہلے مسجد کے اسٹور روم میں صفائی ستھرائی کا کام کر رہا تھا۔ جیسے ہی نماز کا وقت ہوا موذن نے شارٹس پہن رکھے تھے۔ وہ اسی حالت میں نماز دینے کے لیے کھڑا ہو گیا۔

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,046FansLike
2,986FollowersFollow
18,400SubscribersSubscribe

Latest Articles