30 C
Lahore
Tuesday, October 19, 2021

نیند میں کمی یا کوئی اور بیماری، 6 ایسی عادات جن کا تعلق دل کی بیماریوں سے ہے

اگر کوئی انسان دل کی بیماری میں مبتلا ہو جائے، تو اس کا زندہ بچ جانا بہت مشکل ہے۔ لیکن اگر وہ بچ بھی جائے، تو بھی اس کی زندگی کو بہت سے خطرات ہوتے ہیں۔ اس لیے لازم ہے کہ ہم اپنے دل کی صحت کا خیال رکھیں۔ اکثر جب دل کا دورہ پڑتا ہے، تو اس سے پہلے ہماری طبیعت میں کوئی بھی ردو بدل نہیں آتا۔ لیکن چند خاموش علامتیں ضرور ہوتی ہیں، جن سے ہم واقف نہیں ہوتے۔ اگر ان پر غور کر لیں، تو ان خطرناک بیماریوں سے بچا جا سکتا ہے۔ آج ہم آپ کو اس آرٹیکل میں چند ایسی علامتیں بتائیں گے۔ جو سننے میں تو بہت عام سی لگتی ہیں، لیکن اصل میں ہماری جان کے لیے بہت خطرناک ہیں۔

:اینٹی بائیو ٹکس کا زیادہ استعمال

اگر آپ اینٹی بائیو ٹکس کا استعمال زیادہ کرتے ہیں، تو ان سے گریز کریں۔ جو لوگ اینٹی بائیوٹکس کا استعمال لمبے عرصے تک کرتے ہیں۔ ان کے دل کی صحت اس سے بہت متاثر ہوتی ہے۔ لیکن اس کا یہ ہرگز مطلب نہیں کہ، آپ ان دواؤں کا استعمال بلکل ترک کر دیں۔ بلکہ ڈاکٹر کی ہدایات کے مطباق استعمال کریں۔

:حد سے زیادہ ذمہ داری کا بوجھ

کیا آپ کے سر پر بہت سی ذمہ داریاں ہیں؟ یا آپ ہمیشہ سنجیدہ موڈ میں ہی رہتے ہیں۔ اگر ایسا ہے تو آپ کو اپنے موڈ کو بدلنا چاہیئے۔ بہت سے ملکوں میں اس پریشانی کو ختم کرنے کے لیے “لافٹر تھیراپیز“ بھی قائم کیے گئے ہیں۔ جب آپ سنجیدہ رہتے ہیں، تو اس کا اثر آپ کے دل پر ہوتا ہے۔ جو کہ شدید خطرناک ہے۔ آپ کو چاہیئے کہ ہفتے میں ایک دفعہ آؤٹنگ کے لیے ضرور جائیں، یا کوئی کامیڈی فلم دیکھ لیں۔ اس سے آپ کا اسٹریس کم ہو جائے گا۔

:زیادہ سونا یا کم سونا

انسومنیا یعنی اگر آپ کی نیند پوری نہیں ہوتی، تو یہ بھی ٹھیک نہیں ہے۔ اگر آپ ہفتے میں 3 مرتبہ انسومنیا کا شکار ہوتے ہیں، تو اسے وارننگ ہی سمجھیں۔ لیکن اگر آپ 9 گھنٹوں سے زیادہ سوتے ہیں، تو آپ کی یہ عادت دل کی صحت کے لیے 30 گنا زیادہ خطر ناک ہے۔ دوپہر کے وقت سونا بھی خطرناک ہے۔ماہرین کے مطابق جو خواتین دوپہر میں سوتی ہیں۔ ان میں موت کی شرح 58 فیصد زیادہ ہو جاتی ہے۔

:دانت صاف نہ کرنا

ہو سکتا ہے کہ آپ کو یہ بات مزاق لگے، گندے دانت بھی دلی صحت کے لیے خطرناک ہیں۔ دانتوں کو صاف نہ کرنے سے انفیکشن بیکٹیریا بڑھتے ہیں۔ اس کی وجہ سے شریانوں کی بیماری ہو سکتی ہے۔ اسی لیے صبع کو اٹھنے کے بعد اور رات کو سونے سے پہلے دانت ہمیشہ صاف کریں۔

:آپ کی خوراک

اگر آپ کی سوچ یہ ہے کہ میری عمر ابھی بہت کم ہے۔ اس لیے مجھے دل کی بیماری نہیں ہو سکتی۔ لیکن آپ کو یہ پتا ہونا چاہیئے کہ آج کل بچوں میں بھی یہ بیماری پائی جاتی ہے۔ اس کی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ خوراک کا متوازن برقرار نہیں ہوتا۔ بڑا گوشت، سگریٹ نوشی، شراب نوشی، اور بازاری کھانے دل کی صحت کو بہت خراب کر دیتے ہیں۔

:آنکھوں کے گرد ہلکے

اکثر کئی لوگوں کی آنکھوں کی پتلیوں کے گرد ڈارک سرکل نمودار ہوتے ہیں۔ یہ کیلسٹرول کے بڑھنے کی سب سے بڑی نشانی ہے۔ اگر آپ کے کولیسٹرول کی مقدار میں بہت تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے، تو آپ کے دل کو اس سے بہت خطرات لاحق ہیں۔ ایسی صورتحال میں فوری ڈاکٹر سے رجوع کریں۔

اگر کوئی انسان دل کی بیماری میں مبتلا ہو جائے، تو اس کا زندہ بچ جانا بہت مشکل ہے۔ لیکن اگر وہ بچ بھی جائے، تو بھی اس کی زندگی کو بہت سے خطرات ہوتے ہیں۔ اس لیے لازم ہے کہ ہم اپنے دل کی صحت کا خیال رکھیں۔ اکثر جب دل کا دورہ پڑتا ہے، تو اس سے پہلے ہماری طبیعت میں کوئی بھی ردو بدل نہیں آتا۔ لیکن چند خاموش علامتیں ضرور ہوتی ہیں، جن سے ہم واقف نہیں ہوتے۔ اگر ان پر غور کر لیں، تو ان خطرناک بیماریوں سے بچا جا سکتا ہے۔ آج ہم آپ کو اس آرٹیکل میں چند ایسی علامتیں بتائیں گے۔ جو سننے میں تو بہت عام سی لگتی ہیں، لیکن اصل میں ہماری جان کے لیے بہت خطرناک ہیں۔

:اینٹی بائیو ٹکس کا زیادہ استعمال

اگر آپ اینٹی بائیو ٹکس کا استعمال زیادہ کرتے ہیں، تو ان سے گریز کریں۔ جو لوگ اینٹی بائیوٹکس کا استعمال لمبے عرصے تک کرتے ہیں۔ ان کے دل کی صحت اس سے بہت متاثر ہوتی ہے۔ لیکن اس کا یہ ہرگز مطلب نہیں کہ، آپ ان دواؤں کا استعمال بلکل ترک کر دیں۔ بلکہ ڈاکٹر کی ہدایات کے مطباق استعمال کریں۔

:حد سے زیادہ ذمہ داری کا بوجھ

کیا آپ کے سر پر بہت سی ذمہ داریاں ہیں؟ یا آپ ہمیشہ سنجیدہ موڈ میں ہی رہتے ہیں۔ اگر ایسا ہے تو آپ کو اپنے موڈ کو بدلنا چاہیئے۔ بہت سے ملکوں میں اس پریشانی کو ختم کرنے کے لیے “لافٹر تھیراپیز“ بھی قائم کیے گئے ہیں۔ جب آپ سنجیدہ رہتے ہیں، تو اس کا اثر آپ کے دل پر ہوتا ہے۔ جو کہ شدید خطرناک ہے۔ آپ کو چاہیئے کہ ہفتے میں ایک دفعہ آؤٹنگ کے لیے ضرور جائیں، یا کوئی کامیڈی فلم دیکھ لیں۔ اس سے آپ کا اسٹریس کم ہو جائے گا۔

:زیادہ سونا یا کم سونا

انسومنیا یعنی اگر آپ کی نیند پوری نہیں ہوتی، تو یہ بھی ٹھیک نہیں ہے۔ اگر آپ ہفتے میں 3 مرتبہ انسومنیا کا شکار ہوتے ہیں، تو اسے وارننگ ہی سمجھیں۔ لیکن اگر آپ 9 گھنٹوں سے زیادہ سوتے ہیں، تو آپ کی یہ عادت دل کی صحت کے لیے 30 گنا زیادہ خطر ناک ہے۔ دوپہر کے وقت سونا بھی خطرناک ہے۔ماہرین کے مطابق جو خواتین دوپہر میں سوتی ہیں۔ ان میں موت کی شرح 58 فیصد زیادہ ہو جاتی ہے۔

:دانت صاف نہ کرنا

ہو سکتا ہے کہ آپ کو یہ بات مزاق لگے، گندے دانت بھی دلی صحت کے لیے خطرناک ہیں۔ دانتوں کو صاف نہ کرنے سے انفیکشن بیکٹیریا بڑھتے ہیں۔ اس کی وجہ سے شریانوں کی بیماری ہو سکتی ہے۔ اسی لیے صبع کو اٹھنے کے بعد اور رات کو سونے سے پہلے دانت ہمیشہ صاف کریں۔

:آپ کی خوراک

اگر آپ کی سوچ یہ ہے کہ میری عمر ابھی بہت کم ہے۔ اس لیے مجھے دل کی بیماری نہیں ہو سکتی۔ لیکن آپ کو یہ پتا ہونا چاہیئے کہ آج کل بچوں میں بھی یہ بیماری پائی جاتی ہے۔ اس کی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ خوراک کا متوازن برقرار نہیں ہوتا۔ بڑا گوشت، سگریٹ نوشی، شراب نوشی، اور بازاری کھانے دل کی صحت کو بہت خراب کر دیتے ہیں۔

:آنکھوں کے گرد ہلکے

اکثر کئی لوگوں کی آنکھوں کی پتلیوں کے گرد ڈارک سرکل نمودار ہوتے ہیں۔ یہ کیلسٹرول کے بڑھنے کی سب سے بڑی نشانی ہے۔ اگر آپ کے کولیسٹرول کی مقدار میں بہت تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے، تو آپ کے دل کو اس سے بہت خطرات لاحق ہیں۔ ایسی صورتحال میں فوری ڈاکٹر سے رجوع کریں۔

اگر کوئی انسان دل کی بیماری میں مبتلا ہو جائے، تو اس کا زندہ بچ جانا بہت مشکل ہے۔ لیکن اگر وہ بچ بھی جائے، تو بھی اس کی زندگی کو بہت سے خطرات ہوتے ہیں۔ اس لیے لازم ہے کہ ہم اپنے دل کی صحت کا خیال رکھیں۔ اکثر جب دل کا دورہ پڑتا ہے، تو اس سے پہلے ہماری طبیعت میں کوئی بھی ردو بدل نہیں آتا۔ لیکن چند خاموش علامتیں ضرور ہوتی ہیں، جن سے ہم واقف نہیں ہوتے۔ اگر ان پر غور کر لیں، تو ان خطرناک بیماریوں سے بچا جا سکتا ہے۔ آج ہم آپ کو اس آرٹیکل میں چند ایسی علامتیں بتائیں گے۔ جو سننے میں تو بہت عام سی لگتی ہیں، لیکن اصل میں ہماری جان کے لیے بہت خطرناک ہیں۔

:اینٹی بائیو ٹکس کا زیادہ استعمال

اگر آپ اینٹی بائیو ٹکس کا استعمال زیادہ کرتے ہیں، تو ان سے گریز کریں۔ جو لوگ اینٹی بائیوٹکس کا استعمال لمبے عرصے تک کرتے ہیں۔ ان کے دل کی صحت اس سے بہت متاثر ہوتی ہے۔ لیکن اس کا یہ ہرگز مطلب نہیں کہ، آپ ان دواؤں کا استعمال بلکل ترک کر دیں۔ بلکہ ڈاکٹر کی ہدایات کے مطباق استعمال کریں۔

:حد سے زیادہ ذمہ داری کا بوجھ

کیا آپ کے سر پر بہت سی ذمہ داریاں ہیں؟ یا آپ ہمیشہ سنجیدہ موڈ میں ہی رہتے ہیں۔ اگر ایسا ہے تو آپ کو اپنے موڈ کو بدلنا چاہیئے۔ بہت سے ملکوں میں اس پریشانی کو ختم کرنے کے لیے “لافٹر تھیراپیز“ بھی قائم کیے گئے ہیں۔ جب آپ سنجیدہ رہتے ہیں، تو اس کا اثر آپ کے دل پر ہوتا ہے۔ جو کہ شدید خطرناک ہے۔ آپ کو چاہیئے کہ ہفتے میں ایک دفعہ آؤٹنگ کے لیے ضرور جائیں، یا کوئی کامیڈی فلم دیکھ لیں۔ اس سے آپ کا اسٹریس کم ہو جائے گا۔

:زیادہ سونا یا کم سونا

انسومنیا یعنی اگر آپ کی نیند پوری نہیں ہوتی، تو یہ بھی ٹھیک نہیں ہے۔ اگر آپ ہفتے میں 3 مرتبہ انسومنیا کا شکار ہوتے ہیں، تو اسے وارننگ ہی سمجھیں۔ لیکن اگر آپ 9 گھنٹوں سے زیادہ سوتے ہیں، تو آپ کی یہ عادت دل کی صحت کے لیے 30 گنا زیادہ خطر ناک ہے۔ دوپہر کے وقت سونا بھی خطرناک ہے۔ماہرین کے مطابق جو خواتین دوپہر میں سوتی ہیں۔ ان میں موت کی شرح 58 فیصد زیادہ ہو جاتی ہے۔

:دانت صاف نہ کرنا

ہو سکتا ہے کہ آپ کو یہ بات مزاق لگے، گندے دانت بھی دلی صحت کے لیے خطرناک ہیں۔ دانتوں کو صاف نہ کرنے سے انفیکشن بیکٹیریا بڑھتے ہیں۔ اس کی وجہ سے شریانوں کی بیماری ہو سکتی ہے۔ اسی لیے صبع کو اٹھنے کے بعد اور رات کو سونے سے پہلے دانت ہمیشہ صاف کریں۔

:آپ کی خوراک

اگر آپ کی سوچ یہ ہے کہ میری عمر ابھی بہت کم ہے۔ اس لیے مجھے دل کی بیماری نہیں ہو سکتی۔ لیکن آپ کو یہ پتا ہونا چاہیئے کہ آج کل بچوں میں بھی یہ بیماری پائی جاتی ہے۔ اس کی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ خوراک کا متوازن برقرار نہیں ہوتا۔ بڑا گوشت، سگریٹ نوشی، شراب نوشی، اور بازاری کھانے دل کی صحت کو بہت خراب کر دیتے ہیں۔

:آنکھوں کے گرد ہلکے

اکثر کئی لوگوں کی آنکھوں کی پتلیوں کے گرد ڈارک سرکل نمودار ہوتے ہیں۔ یہ کیلسٹرول کے بڑھنے کی سب سے بڑی نشانی ہے۔ اگر آپ کے کولیسٹرول کی مقدار میں بہت تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے، تو آپ کے دل کو اس سے بہت خطرات لاحق ہیں۔ ایسی صورتحال میں فوری ڈاکٹر سے رجوع کریں۔

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,046FansLike
2,986FollowersFollow
18,400SubscribersSubscribe

Latest Articles