25 C
Lahore
Tuesday, October 19, 2021

“جب آپ اُٹھتے ہیں یا بیٹھتے ہیں تو گھٹنوں میں سے چٹخنے کی آواز آتی ہے”

جب کبھی بھی آپ سڑھیاں وغیرہ چڑھتے ہیں یا اٹھ کے بیٹھتے ہیں تو آپ کے گھٹنوں میں سے ٹک ٹک کی آوازیں آتی ہی یہ کن وجوہات کی وجہ سے ہوتا ہے آئیں وجہ بتاتے ہیں۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ آپ کے گھٹنے کے گرد غیر ضروری پٹھوں کا ہونا ہے اور یہ اس لیے ہوتا ہے کہ آپ کو کوئی چوٹ وغیرا لگی ہو اور اس کا مناسب طور پر علاج نہ ہوا ہو۔

امریکا کے بیلر کالج کے سائنسدانوں نے یہ تحقیق کی ہے کہ اس بیماری کو آرتھرائیٹس کا نام دیا جاتا ہے اور اسی سبب سے ایک ٹیسٹ کیا گیا جس میں 75 سے زیادہ لوگوں کو یہی بیماری لاحق تھی،اور یہ اس لیے ہے کہ ان کے جوڑ چڑھے ہوئے ہیں۔اس بیماری کی وجہ سے سوزش یا ٹیڑھاپن ہو سکتا ہے اور اسی کی وجہ سے ٹک ٹک کی آوازیں آتی ہیں۔ اس تحقیق سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ جن کو یہ تکلیف لاحق ہوتی ہے وہ سال میں دو مرتبہ گٹھیا کے درد کو برداشت کرتے ہیں۔

مگر جو یہ ٹک ٹک کی آوازیں آتے ہیں یہ اتنی خطرناک بھی نہیں ہیں اگر آپ آرتھرائیٹس اور گٹیھا کے مرض سے بچنا چاہتے ہیں تو چند احتیاطی تدابیر کو اپنا لیں۔

لہذاً آپ روزانہ ورزش کریں اور سائیکل چلایا کریں تو آپ اس مرض سے چھٹکارہ پا سکتے ہیں۔

جب کبھی بھی آپ سڑھیاں وغیرہ چڑھتے ہیں یا اٹھ کے بیٹھتے ہیں تو آپ کے گھٹنوں میں سے ٹک ٹک کی آوازیں آتی ہی یہ کن وجوہات کی وجہ سے ہوتا ہے آئیں وجہ بتاتے ہیں۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ آپ کے گھٹنے کے گرد غیر ضروری پٹھوں کا ہونا ہے اور یہ اس لیے ہوتا ہے کہ آپ کو کوئی چوٹ وغیرا لگی ہو اور اس کا مناسب طور پر علاج نہ ہوا ہو۔

امریکا کے بیلر کالج کے سائنسدانوں نے یہ تحقیق کی ہے کہ اس بیماری کو آرتھرائیٹس کا نام دیا جاتا ہے اور اسی سبب سے ایک ٹیسٹ کیا گیا جس میں 75 سے زیادہ لوگوں کو یہی بیماری لاحق تھی،اور یہ اس لیے ہے کہ ان کے جوڑ چڑھے ہوئے ہیں۔اس بیماری کی وجہ سے سوزش یا ٹیڑھاپن ہو سکتا ہے اور اسی کی وجہ سے ٹک ٹک کی آوازیں آتی ہیں۔ اس تحقیق سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ جن کو یہ تکلیف لاحق ہوتی ہے وہ سال میں دو مرتبہ گٹھیا کے درد کو برداشت کرتے ہیں۔

مگر جو یہ ٹک ٹک کی آوازیں آتے ہیں یہ اتنی خطرناک بھی نہیں ہیں اگر آپ آرتھرائیٹس اور گٹیھا کے مرض سے بچنا چاہتے ہیں تو چند احتیاطی تدابیر کو اپنا لیں۔

لہذاً آپ روزانہ ورزش کریں اور سائیکل چلایا کریں تو آپ اس مرض سے چھٹکارہ پا سکتے ہیں۔

جب کبھی بھی آپ سڑھیاں وغیرہ چڑھتے ہیں یا اٹھ کے بیٹھتے ہیں تو آپ کے گھٹنوں میں سے ٹک ٹک کی آوازیں آتی ہی یہ کن وجوہات کی وجہ سے ہوتا ہے آئیں وجہ بتاتے ہیں۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ آپ کے گھٹنے کے گرد غیر ضروری پٹھوں کا ہونا ہے اور یہ اس لیے ہوتا ہے کہ آپ کو کوئی چوٹ وغیرا لگی ہو اور اس کا مناسب طور پر علاج نہ ہوا ہو۔

امریکا کے بیلر کالج کے سائنسدانوں نے یہ تحقیق کی ہے کہ اس بیماری کو آرتھرائیٹس کا نام دیا جاتا ہے اور اسی سبب سے ایک ٹیسٹ کیا گیا جس میں 75 سے زیادہ لوگوں کو یہی بیماری لاحق تھی،اور یہ اس لیے ہے کہ ان کے جوڑ چڑھے ہوئے ہیں۔اس بیماری کی وجہ سے سوزش یا ٹیڑھاپن ہو سکتا ہے اور اسی کی وجہ سے ٹک ٹک کی آوازیں آتی ہیں۔ اس تحقیق سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ جن کو یہ تکلیف لاحق ہوتی ہے وہ سال میں دو مرتبہ گٹھیا کے درد کو برداشت کرتے ہیں۔

مگر جو یہ ٹک ٹک کی آوازیں آتے ہیں یہ اتنی خطرناک بھی نہیں ہیں اگر آپ آرتھرائیٹس اور گٹیھا کے مرض سے بچنا چاہتے ہیں تو چند احتیاطی تدابیر کو اپنا لیں۔

لہذاً آپ روزانہ ورزش کریں اور سائیکل چلایا کریں تو آپ اس مرض سے چھٹکارہ پا سکتے ہیں۔

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,046FansLike
2,984FollowersFollow
18,400SubscribersSubscribe

Latest Articles