30 C
Lahore
Tuesday, October 19, 2021

سوتے ہوئے سرہانے کے نیچے پیاز رکھنے کا فائدہ

پیاز ایک ایسی سبزی ہے جس کے بغیر کھانے کا مزہ نہیں ہے ۔ پھر پیاز چاہے سلاد میں شامل کر کے کھائیں یا سالن میں ڈال دیں اس کا ذائقہ ہر بار مزیدار ہوتا ہے اور صحت کے لیے بھی فائدہ مند ہے۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ پیاز کا استعمال انسانی جسم کے لئے نہایت مفید ہے

پیاز میں سلفائیڈ کی مقداروافر ہونے کی وجہ سے یہ خون کو پتلا رکھنے میں انسانی جسم کو مدد فراہم کرتا ہے ۔پیاز کے استعمال سے بلڈ پریشر کوبھی کنٹرول میں رکھا جا سکتا ہے اور اس کو کھانے سے دل کی مختلف بیماریوں سے بھی بچنا ممکن ہے ۔
جوکچھ بھی ہوجائے پیاز کے فائدے لاتعداد ہیں ، یہی وجہ ہے کہ زیادہ تر مائیں رات کو سوتے وقت اپنے بچوں کے تکیےکے نیچے پیازکو رکھ کر سوتی ہیں اور اس سے ان کے بچے بہت سی بیماریوں سے بچ جاتے ہیں۔ مثلا کھانسی نہ آنا کیونکہ پیاز میں سلفر موجود ہوتا ہے اورزیادہ تر بچوں اور بڑوں کو اگر رات کے وقت کھانسی شروع ہو جائے تو نیند نہیں آتی ہے اور کافی مشکل کا سامنا ہوتا ہے اور اگر پیاز سرہانے کے نیچے موجود ہو تو کھانسی نہیں آئےگی ۔

متلی کے لئے اگر بچے کواچانک متلی شروع ہو جائے توپیاز کو لیں دو حصوں میں کاٹ کر بغل میں دبا دیں ،کچھ دیر بعد ہی طبعیت مین بحالی واضع ہونے لگے گی اور متلی کی بیماری خحتم ہوجائے گی ۔
انفیکشن سے بچنے کے لیے رات کو سونے سے پہلے اگر پیاز کو اپنے سر کے نیچے رکھ لیں تو ہر قسم کے انفیکشن سےبچا جا سکتا ہے اس لیے پیاز کو اپنے بچوں کے تکیے کے نیچے رکھ کر سویا کریں تاکہ بیماریاں بچوں سے دور رہیں ۔

پیاز ایک ایسی سبزی ہے جس کے بغیر کھانے کا مزہ نہیں ہے ۔ پھر پیاز چاہے سلاد میں شامل کر کے کھائیں یا سالن میں ڈال دیں اس کا ذائقہ ہر بار مزیدار ہوتا ہے اور صحت کے لیے بھی فائدہ مند ہے۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ پیاز کا استعمال انسانی جسم کے لئے نہایت مفید ہے

پیاز میں سلفائیڈ کی مقداروافر ہونے کی وجہ سے یہ خون کو پتلا رکھنے میں انسانی جسم کو مدد فراہم کرتا ہے ۔پیاز کے استعمال سے بلڈ پریشر کوبھی کنٹرول میں رکھا جا سکتا ہے اور اس کو کھانے سے دل کی مختلف بیماریوں سے بھی بچنا ممکن ہے ۔
جوکچھ بھی ہوجائے پیاز کے فائدے لاتعداد ہیں ، یہی وجہ ہے کہ زیادہ تر مائیں رات کو سوتے وقت اپنے بچوں کے تکیےکے نیچے پیازکو رکھ کر سوتی ہیں اور اس سے ان کے بچے بہت سی بیماریوں سے بچ جاتے ہیں۔ مثلا کھانسی نہ آنا کیونکہ پیاز میں سلفر موجود ہوتا ہے اورزیادہ تر بچوں اور بڑوں کو اگر رات کے وقت کھانسی شروع ہو جائے تو نیند نہیں آتی ہے اور کافی مشکل کا سامنا ہوتا ہے اور اگر پیاز سرہانے کے نیچے موجود ہو تو کھانسی نہیں آئےگی ۔

متلی کے لئے اگر بچے کواچانک متلی شروع ہو جائے توپیاز کو لیں دو حصوں میں کاٹ کر بغل میں دبا دیں ،کچھ دیر بعد ہی طبعیت مین بحالی واضع ہونے لگے گی اور متلی کی بیماری خحتم ہوجائے گی ۔
انفیکشن سے بچنے کے لیے رات کو سونے سے پہلے اگر پیاز کو اپنے سر کے نیچے رکھ لیں تو ہر قسم کے انفیکشن سےبچا جا سکتا ہے اس لیے پیاز کو اپنے بچوں کے تکیے کے نیچے رکھ کر سویا کریں تاکہ بیماریاں بچوں سے دور رہیں ۔

پیاز ایک ایسی سبزی ہے جس کے بغیر کھانے کا مزہ نہیں ہے ۔ پھر پیاز چاہے سلاد میں شامل کر کے کھائیں یا سالن میں ڈال دیں اس کا ذائقہ ہر بار مزیدار ہوتا ہے اور صحت کے لیے بھی فائدہ مند ہے۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ پیاز کا استعمال انسانی جسم کے لئے نہایت مفید ہے

پیاز میں سلفائیڈ کی مقداروافر ہونے کی وجہ سے یہ خون کو پتلا رکھنے میں انسانی جسم کو مدد فراہم کرتا ہے ۔پیاز کے استعمال سے بلڈ پریشر کوبھی کنٹرول میں رکھا جا سکتا ہے اور اس کو کھانے سے دل کی مختلف بیماریوں سے بھی بچنا ممکن ہے ۔
جوکچھ بھی ہوجائے پیاز کے فائدے لاتعداد ہیں ، یہی وجہ ہے کہ زیادہ تر مائیں رات کو سوتے وقت اپنے بچوں کے تکیےکے نیچے پیازکو رکھ کر سوتی ہیں اور اس سے ان کے بچے بہت سی بیماریوں سے بچ جاتے ہیں۔ مثلا کھانسی نہ آنا کیونکہ پیاز میں سلفر موجود ہوتا ہے اورزیادہ تر بچوں اور بڑوں کو اگر رات کے وقت کھانسی شروع ہو جائے تو نیند نہیں آتی ہے اور کافی مشکل کا سامنا ہوتا ہے اور اگر پیاز سرہانے کے نیچے موجود ہو تو کھانسی نہیں آئےگی ۔

متلی کے لئے اگر بچے کواچانک متلی شروع ہو جائے توپیاز کو لیں دو حصوں میں کاٹ کر بغل میں دبا دیں ،کچھ دیر بعد ہی طبعیت مین بحالی واضع ہونے لگے گی اور متلی کی بیماری خحتم ہوجائے گی ۔
انفیکشن سے بچنے کے لیے رات کو سونے سے پہلے اگر پیاز کو اپنے سر کے نیچے رکھ لیں تو ہر قسم کے انفیکشن سےبچا جا سکتا ہے اس لیے پیاز کو اپنے بچوں کے تکیے کے نیچے رکھ کر سویا کریں تاکہ بیماریاں بچوں سے دور رہیں ۔

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,046FansLike
2,986FollowersFollow
18,400SubscribersSubscribe

Latest Articles