26 C
Lahore
Tuesday, October 19, 2021

دنیا کے ایسے پُراسرار دروازے، جن کے پیچھے بہت سے خزانے دفن ہیں

اس جگمگاتی اور خوبصورت نظاروں سے بھری دنیا کو دیکھتے ہوئے۔ ہم یہ بلکل بھی یقین نہیں کر سکتے کہ ابھی بھی اس دنیا میں کہیں نہ کہیں تاریکی کی بادشاہت قائم ہے۔ انسان خلا میں جا کر دوسرے سیاروں کے اہم راز افشاں تو کر رہا ہے، لیکن ابھی تک وہ اپنی دنیا کو مکمل طور پر نہیں سمجھ پایا۔ اِنہیں حیرت انگیز چیزوں میں کچھ ایسے دروازے بھی ہیں، جن کے بارے میں آج تک کوئی جان نہیں پایا کے ان کے پیچھے کیا ہے۔

It is better to keep these doors closed

:اہرامِ مصر کا ابولہول

ملکِ مصر میں موجود اہرام صدیوں سے انسانوں کے لیے ایک پہلی بنے ہوئے ہیں۔ زمانہ قدیم میں بنائی گئی عظیم عمارتوں میں موجود مصالعہ لگی ممیاں لوگوں کو حیرت میں مبتلا کر دیتی ہیں۔ مگر اِن تہہ خانوں میں صدیوں پُرانے ایسے دروازے ہیں جنہیں آج تک نہ کسی نے کھولا ہے، اور نہ ہی کسی نے کوشش کی ہے۔ ابولہول کے اہرام کا شمار بھی انہیں تہہ خانوں میں ہوتا ہے، جس کے دروازے کھولنے کی اجازت آج تک مصری حکومت نے نہیں دی۔

It is very difficult to know completely about Abolhole

:ہوٹل کا عجیب دروازہ

دنیا میں لاتعداد ہوٹل موجود ہیں، لیکن ہوٹل ٹیرر آف بینف اسپرنگز اپنی ایک الگ پہچان رکھتا ہے۔ اس عمارت میں کئی سالوں پہلے ایک خاندان رات گزارنے کے لیے آیا تھا۔ مگر صبع کو جب کمرے کا دروازہ کھولا گیا، تو تمام افراد کی لاشیں زمین پر ڈھیر تھیں۔ کمرے کی ہر دیوار خون کے دھبوں سے بھری پڑی تھی۔ اس دل دہلا دینے والے واقع کے بعد اس دروازے کو ہمیشہ کے لیے بند کر دیا گیا۔ آج تک اس دروازے کو کھولنے کی ہمت کسی میں بھی نہیں ہے۔

This room is a terrible room

:بادشاہ قن کا مزار

بادشاہ قن کا مزار ایک مزار ہی نہیں بلکہ یہ ایک مکمل شہر تھا۔ جو کہ صدیوں پہلے زمین میں دفن ہو گیا تھا۔ اور 1973 میں دو چائیینیز بھائی جو کہ کسان تھے، انھیں کھدائی کے دوران ملا۔ اس دفن شہر کو بادشاہ قن کا مزار کہا جاتا ہے۔ مزار کی رکھوالی کے لیے بادشاہ نے 7000 سپاہیوں پر منبی فوج قائم کی تھی۔ بادشاہ قن مزار کی دریافت کے بعد اُن دونوں کسان بھائیوں کی موت واقع ہو گئی تھی۔ اسی لیے لوگوں کا کہنا ہے کہ بہتر ہے کہ مزار کے دروازوں کو نہ کھولا جائے۔

It was an ancient and huge city

:پدماھاشوامی مندر کا دروازہ

یہ مندر ہندؤں کے مشہور بھگوان وشنو کا مندر ہے۔ اس مندر کو کئی صدیوں پہلے ایک شاہی خاندان نے تعمیر کروایا تھا۔ اس خاندان نے اپنی ساری دولت مندر کے چھ دروازوں میں دفن کر دی۔ ان دروازوں کو کھولنے کی اجازت کسی کو بھی نہیں تھی۔ کیونکہ اس کی مندر کی خوبیوں کے متعلق بہت سی کہانیاں لوگوں میں مشہور تھیں۔ لہذاً 2011 میں بھارتی حکومت نے ان چھ دروازوں میں سے پانچ دروازے کھلوائے ، جن میں بیش قیمت خزانہ دفن تھا۔ مگر چھٹا دروزاہ وہ کھول نہیں سکے۔

This is a very holy place for Hindus

:تاج محل

تاج محل کا شمار دنیا کے ساتھ عجوبوں میں ہوتا ہے، جسے مغلیہ بادشاہ شاہ جہاں نے اپنی پسندیدہ اہلیہ ممتاز بیگم کی یاد میں بنوایا تھا۔ تاض محل دراصل ایک مقبرے کی شکل میں ہے۔ جس کے تہہ خانوں میں بہت سے دروازے ہیں۔ بعض افراد کا کہنا ہے کہ ان میں سے کسی ایک دروازے میں ممتاز بیگم کی حنوط شدہ لاش موجود ہے۔ مگر کئی کہتے ہیں کہ ان میں ہندؤں کی مورتیاں ہیں۔ لہذاً یہ دروازے بہت عرصہ سے بند ہیں، اور انھیں کھولنے کی اجازت کسی کو بھی نہیں ہے۔

The Taj Mahal has many secret gates

اس جگمگاتی اور خوبصورت نظاروں سے بھری دنیا کو دیکھتے ہوئے۔ ہم یہ بلکل بھی یقین نہیں کر سکتے کہ ابھی بھی اس دنیا میں کہیں نہ کہیں تاریکی کی بادشاہت قائم ہے۔ انسان خلا میں جا کر دوسرے سیاروں کے اہم راز افشاں تو کر رہا ہے، لیکن ابھی تک وہ اپنی دنیا کو مکمل طور پر نہیں سمجھ پایا۔ اِنہیں حیرت انگیز چیزوں میں کچھ ایسے دروازے بھی ہیں، جن کے بارے میں آج تک کوئی جان نہیں پایا کے ان کے پیچھے کیا ہے۔

It is better to keep these doors closed

:اہرامِ مصر کا ابولہول

ملکِ مصر میں موجود اہرام صدیوں سے انسانوں کے لیے ایک پہلی بنے ہوئے ہیں۔ زمانہ قدیم میں بنائی گئی عظیم عمارتوں میں موجود مصالعہ لگی ممیاں لوگوں کو حیرت میں مبتلا کر دیتی ہیں۔ مگر اِن تہہ خانوں میں صدیوں پُرانے ایسے دروازے ہیں جنہیں آج تک نہ کسی نے کھولا ہے، اور نہ ہی کسی نے کوشش کی ہے۔ ابولہول کے اہرام کا شمار بھی انہیں تہہ خانوں میں ہوتا ہے، جس کے دروازے کھولنے کی اجازت آج تک مصری حکومت نے نہیں دی۔

It is very difficult to know completely about Abolhole

:ہوٹل کا عجیب دروازہ

دنیا میں لاتعداد ہوٹل موجود ہیں، لیکن ہوٹل ٹیرر آف بینف اسپرنگز اپنی ایک الگ پہچان رکھتا ہے۔ اس عمارت میں کئی سالوں پہلے ایک خاندان رات گزارنے کے لیے آیا تھا۔ مگر صبع کو جب کمرے کا دروازہ کھولا گیا، تو تمام افراد کی لاشیں زمین پر ڈھیر تھیں۔ کمرے کی ہر دیوار خون کے دھبوں سے بھری پڑی تھی۔ اس دل دہلا دینے والے واقع کے بعد اس دروازے کو ہمیشہ کے لیے بند کر دیا گیا۔ آج تک اس دروازے کو کھولنے کی ہمت کسی میں بھی نہیں ہے۔

This room is a terrible room

:بادشاہ قن کا مزار

بادشاہ قن کا مزار ایک مزار ہی نہیں بلکہ یہ ایک مکمل شہر تھا۔ جو کہ صدیوں پہلے زمین میں دفن ہو گیا تھا۔ اور 1973 میں دو چائیینیز بھائی جو کہ کسان تھے، انھیں کھدائی کے دوران ملا۔ اس دفن شہر کو بادشاہ قن کا مزار کہا جاتا ہے۔ مزار کی رکھوالی کے لیے بادشاہ نے 7000 سپاہیوں پر منبی فوج قائم کی تھی۔ بادشاہ قن مزار کی دریافت کے بعد اُن دونوں کسان بھائیوں کی موت واقع ہو گئی تھی۔ اسی لیے لوگوں کا کہنا ہے کہ بہتر ہے کہ مزار کے دروازوں کو نہ کھولا جائے۔

It was an ancient and huge city

:پدماھاشوامی مندر کا دروازہ

یہ مندر ہندؤں کے مشہور بھگوان وشنو کا مندر ہے۔ اس مندر کو کئی صدیوں پہلے ایک شاہی خاندان نے تعمیر کروایا تھا۔ اس خاندان نے اپنی ساری دولت مندر کے چھ دروازوں میں دفن کر دی۔ ان دروازوں کو کھولنے کی اجازت کسی کو بھی نہیں تھی۔ کیونکہ اس کی مندر کی خوبیوں کے متعلق بہت سی کہانیاں لوگوں میں مشہور تھیں۔ لہذاً 2011 میں بھارتی حکومت نے ان چھ دروازوں میں سے پانچ دروازے کھلوائے ، جن میں بیش قیمت خزانہ دفن تھا۔ مگر چھٹا دروزاہ وہ کھول نہیں سکے۔

This is a very holy place for Hindus

:تاج محل

تاج محل کا شمار دنیا کے ساتھ عجوبوں میں ہوتا ہے، جسے مغلیہ بادشاہ شاہ جہاں نے اپنی پسندیدہ اہلیہ ممتاز بیگم کی یاد میں بنوایا تھا۔ تاض محل دراصل ایک مقبرے کی شکل میں ہے۔ جس کے تہہ خانوں میں بہت سے دروازے ہیں۔ بعض افراد کا کہنا ہے کہ ان میں سے کسی ایک دروازے میں ممتاز بیگم کی حنوط شدہ لاش موجود ہے۔ مگر کئی کہتے ہیں کہ ان میں ہندؤں کی مورتیاں ہیں۔ لہذاً یہ دروازے بہت عرصہ سے بند ہیں، اور انھیں کھولنے کی اجازت کسی کو بھی نہیں ہے۔

The Taj Mahal has many secret gates

اس جگمگاتی اور خوبصورت نظاروں سے بھری دنیا کو دیکھتے ہوئے۔ ہم یہ بلکل بھی یقین نہیں کر سکتے کہ ابھی بھی اس دنیا میں کہیں نہ کہیں تاریکی کی بادشاہت قائم ہے۔ انسان خلا میں جا کر دوسرے سیاروں کے اہم راز افشاں تو کر رہا ہے، لیکن ابھی تک وہ اپنی دنیا کو مکمل طور پر نہیں سمجھ پایا۔ اِنہیں حیرت انگیز چیزوں میں کچھ ایسے دروازے بھی ہیں، جن کے بارے میں آج تک کوئی جان نہیں پایا کے ان کے پیچھے کیا ہے۔

It is better to keep these doors closed

:اہرامِ مصر کا ابولہول

ملکِ مصر میں موجود اہرام صدیوں سے انسانوں کے لیے ایک پہلی بنے ہوئے ہیں۔ زمانہ قدیم میں بنائی گئی عظیم عمارتوں میں موجود مصالعہ لگی ممیاں لوگوں کو حیرت میں مبتلا کر دیتی ہیں۔ مگر اِن تہہ خانوں میں صدیوں پُرانے ایسے دروازے ہیں جنہیں آج تک نہ کسی نے کھولا ہے، اور نہ ہی کسی نے کوشش کی ہے۔ ابولہول کے اہرام کا شمار بھی انہیں تہہ خانوں میں ہوتا ہے، جس کے دروازے کھولنے کی اجازت آج تک مصری حکومت نے نہیں دی۔

It is very difficult to know completely about Abolhole

:ہوٹل کا عجیب دروازہ

دنیا میں لاتعداد ہوٹل موجود ہیں، لیکن ہوٹل ٹیرر آف بینف اسپرنگز اپنی ایک الگ پہچان رکھتا ہے۔ اس عمارت میں کئی سالوں پہلے ایک خاندان رات گزارنے کے لیے آیا تھا۔ مگر صبع کو جب کمرے کا دروازہ کھولا گیا، تو تمام افراد کی لاشیں زمین پر ڈھیر تھیں۔ کمرے کی ہر دیوار خون کے دھبوں سے بھری پڑی تھی۔ اس دل دہلا دینے والے واقع کے بعد اس دروازے کو ہمیشہ کے لیے بند کر دیا گیا۔ آج تک اس دروازے کو کھولنے کی ہمت کسی میں بھی نہیں ہے۔

This room is a terrible room

:بادشاہ قن کا مزار

بادشاہ قن کا مزار ایک مزار ہی نہیں بلکہ یہ ایک مکمل شہر تھا۔ جو کہ صدیوں پہلے زمین میں دفن ہو گیا تھا۔ اور 1973 میں دو چائیینیز بھائی جو کہ کسان تھے، انھیں کھدائی کے دوران ملا۔ اس دفن شہر کو بادشاہ قن کا مزار کہا جاتا ہے۔ مزار کی رکھوالی کے لیے بادشاہ نے 7000 سپاہیوں پر منبی فوج قائم کی تھی۔ بادشاہ قن مزار کی دریافت کے بعد اُن دونوں کسان بھائیوں کی موت واقع ہو گئی تھی۔ اسی لیے لوگوں کا کہنا ہے کہ بہتر ہے کہ مزار کے دروازوں کو نہ کھولا جائے۔

It was an ancient and huge city

:پدماھاشوامی مندر کا دروازہ

یہ مندر ہندؤں کے مشہور بھگوان وشنو کا مندر ہے۔ اس مندر کو کئی صدیوں پہلے ایک شاہی خاندان نے تعمیر کروایا تھا۔ اس خاندان نے اپنی ساری دولت مندر کے چھ دروازوں میں دفن کر دی۔ ان دروازوں کو کھولنے کی اجازت کسی کو بھی نہیں تھی۔ کیونکہ اس کی مندر کی خوبیوں کے متعلق بہت سی کہانیاں لوگوں میں مشہور تھیں۔ لہذاً 2011 میں بھارتی حکومت نے ان چھ دروازوں میں سے پانچ دروازے کھلوائے ، جن میں بیش قیمت خزانہ دفن تھا۔ مگر چھٹا دروزاہ وہ کھول نہیں سکے۔

This is a very holy place for Hindus

:تاج محل

تاج محل کا شمار دنیا کے ساتھ عجوبوں میں ہوتا ہے، جسے مغلیہ بادشاہ شاہ جہاں نے اپنی پسندیدہ اہلیہ ممتاز بیگم کی یاد میں بنوایا تھا۔ تاض محل دراصل ایک مقبرے کی شکل میں ہے۔ جس کے تہہ خانوں میں بہت سے دروازے ہیں۔ بعض افراد کا کہنا ہے کہ ان میں سے کسی ایک دروازے میں ممتاز بیگم کی حنوط شدہ لاش موجود ہے۔ مگر کئی کہتے ہیں کہ ان میں ہندؤں کی مورتیاں ہیں۔ لہذاً یہ دروازے بہت عرصہ سے بند ہیں، اور انھیں کھولنے کی اجازت کسی کو بھی نہیں ہے۔

The Taj Mahal has many secret gates

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,046FansLike
2,984FollowersFollow
18,400SubscribersSubscribe

Latest Articles