30 C
Lahore
Tuesday, October 19, 2021

یہاں کے پانی میں شیطان غسل کرتا ہے، نیوزی لینڈ میں دنیا کا عجیب تالاب

نیوزی لینڈ کا علاقہ وائے- او-ٹاپو دلچسپ اور اور حیرت انگیز عجوبوں سے بھرا پڑا ہے۔ مگر یہاں کی سب سے زیادہ پُرکشش اور خوبصورت جگہ سبز پانی والا تالاب ہے جس کو ڈیول باتھ کے نام سے جانا جاتا ہے۔

اس وقت دنیا بھر میں تاؤپو آتش فشاں زون، نیوزی لینڈ کا سب سے شاندار جیو تھرمل علاقہ ہے۔ یہ جگہ گزشتہ سال ایک بڑے پیمانے پر آتش فشاں پھٹنے کی وجہ سے وجود میں آیا تھا۔

No one can deny its beauty

:سبز پانی کی وجہ کیا ہے

اس تالاب کے سبز پانی کی بڑی وجہ ہائیڈروجن سلفائیڈ گیسس اور فیرس نمکیات کے ملنے کی وجہ سے ہے۔ ہرے رنگ کے پانی کا اتنے بڑے پیمانے پر ہونے کا انحصار سورج کی روشنی اور پانی میں پائے جانے والے معدنیات پر ہے۔ ایسا کوئی لمحہ ایسا نہیں ہے، جب یہ پانی نظر کو بُرا لگے۔

Many people want to see it

اس پانی میں سے بہت عجیب اور مختلف بُو اُٹھتی ہے۔ جسے گٹر اور خراب انڈے کی بوُ کہا جاتا ہے۔ اسی لیے اس تالاب کو شیطان کے غسل کرنے والی جگہ سے جانا جاتا ہے۔ کیونکہ یہاں سے بہت عجیب بد بو ہر وقت آتی رہتی ہے۔

:تالاب کا رقبہ کیا ہے

اس تالاب کا رقبہ 11 مربع میل پر پھیلا ہوا ہے۔ سیاحوں کے لیے اس تالاب کے قریب ایک پُل قائم ہے، جہاں سے سیاح اس تالاب کو بہت آسانی سے دیکھ لیتے ہیں۔ اور اس کی خوبصورتی سے بھرپور لطف انداز ہوتے ہیں۔

ایک وجہ تو یہ ہے، کہ سورج کی کرنیں اس سبز پانی پر پڑتی ہیں۔ دوسری اس سبز پانی کی سب سے بڑی وجہ، اس تالاب میں آئرن کی بہت زیادہ مقدار ہے۔ اس کے علاوہ پانی میں پائی جانے والی گندھک ہے۔ جس کی وجہ سے پانی سبز رنگ کا دکھائی دیتا ہے۔

لہذاً یہ پانی نہانے اور تیرنے کے لیے بلکل بھی نہیں ہے۔ کیونکہ اس تالاب میں پائی جانے والی گیسیں انسانی کی جلد کو بہت جلدی متاثر کر سکتی ہے۔

نیوزی لینڈ کا علاقہ وائے- او-ٹاپو دلچسپ اور اور حیرت انگیز عجوبوں سے بھرا پڑا ہے۔ مگر یہاں کی سب سے زیادہ پُرکشش اور خوبصورت جگہ سبز پانی والا تالاب ہے جس کو ڈیول باتھ کے نام سے جانا جاتا ہے۔

اس وقت دنیا بھر میں تاؤپو آتش فشاں زون، نیوزی لینڈ کا سب سے شاندار جیو تھرمل علاقہ ہے۔ یہ جگہ گزشتہ سال ایک بڑے پیمانے پر آتش فشاں پھٹنے کی وجہ سے وجود میں آیا تھا۔

No one can deny its beauty

:سبز پانی کی وجہ کیا ہے

اس تالاب کے سبز پانی کی بڑی وجہ ہائیڈروجن سلفائیڈ گیسس اور فیرس نمکیات کے ملنے کی وجہ سے ہے۔ ہرے رنگ کے پانی کا اتنے بڑے پیمانے پر ہونے کا انحصار سورج کی روشنی اور پانی میں پائے جانے والے معدنیات پر ہے۔ ایسا کوئی لمحہ ایسا نہیں ہے، جب یہ پانی نظر کو بُرا لگے۔

Many people want to see it

اس پانی میں سے بہت عجیب اور مختلف بُو اُٹھتی ہے۔ جسے گٹر اور خراب انڈے کی بوُ کہا جاتا ہے۔ اسی لیے اس تالاب کو شیطان کے غسل کرنے والی جگہ سے جانا جاتا ہے۔ کیونکہ یہاں سے بہت عجیب بد بو ہر وقت آتی رہتی ہے۔

:تالاب کا رقبہ کیا ہے

اس تالاب کا رقبہ 11 مربع میل پر پھیلا ہوا ہے۔ سیاحوں کے لیے اس تالاب کے قریب ایک پُل قائم ہے، جہاں سے سیاح اس تالاب کو بہت آسانی سے دیکھ لیتے ہیں۔ اور اس کی خوبصورتی سے بھرپور لطف انداز ہوتے ہیں۔

ایک وجہ تو یہ ہے، کہ سورج کی کرنیں اس سبز پانی پر پڑتی ہیں۔ دوسری اس سبز پانی کی سب سے بڑی وجہ، اس تالاب میں آئرن کی بہت زیادہ مقدار ہے۔ اس کے علاوہ پانی میں پائی جانے والی گندھک ہے۔ جس کی وجہ سے پانی سبز رنگ کا دکھائی دیتا ہے۔

لہذاً یہ پانی نہانے اور تیرنے کے لیے بلکل بھی نہیں ہے۔ کیونکہ اس تالاب میں پائی جانے والی گیسیں انسانی کی جلد کو بہت جلدی متاثر کر سکتی ہے۔

نیوزی لینڈ کا علاقہ وائے- او-ٹاپو دلچسپ اور اور حیرت انگیز عجوبوں سے بھرا پڑا ہے۔ مگر یہاں کی سب سے زیادہ پُرکشش اور خوبصورت جگہ سبز پانی والا تالاب ہے جس کو ڈیول باتھ کے نام سے جانا جاتا ہے۔

اس وقت دنیا بھر میں تاؤپو آتش فشاں زون، نیوزی لینڈ کا سب سے شاندار جیو تھرمل علاقہ ہے۔ یہ جگہ گزشتہ سال ایک بڑے پیمانے پر آتش فشاں پھٹنے کی وجہ سے وجود میں آیا تھا۔

No one can deny its beauty

:سبز پانی کی وجہ کیا ہے

اس تالاب کے سبز پانی کی بڑی وجہ ہائیڈروجن سلفائیڈ گیسس اور فیرس نمکیات کے ملنے کی وجہ سے ہے۔ ہرے رنگ کے پانی کا اتنے بڑے پیمانے پر ہونے کا انحصار سورج کی روشنی اور پانی میں پائے جانے والے معدنیات پر ہے۔ ایسا کوئی لمحہ ایسا نہیں ہے، جب یہ پانی نظر کو بُرا لگے۔

Many people want to see it

اس پانی میں سے بہت عجیب اور مختلف بُو اُٹھتی ہے۔ جسے گٹر اور خراب انڈے کی بوُ کہا جاتا ہے۔ اسی لیے اس تالاب کو شیطان کے غسل کرنے والی جگہ سے جانا جاتا ہے۔ کیونکہ یہاں سے بہت عجیب بد بو ہر وقت آتی رہتی ہے۔

:تالاب کا رقبہ کیا ہے

اس تالاب کا رقبہ 11 مربع میل پر پھیلا ہوا ہے۔ سیاحوں کے لیے اس تالاب کے قریب ایک پُل قائم ہے، جہاں سے سیاح اس تالاب کو بہت آسانی سے دیکھ لیتے ہیں۔ اور اس کی خوبصورتی سے بھرپور لطف انداز ہوتے ہیں۔

ایک وجہ تو یہ ہے، کہ سورج کی کرنیں اس سبز پانی پر پڑتی ہیں۔ دوسری اس سبز پانی کی سب سے بڑی وجہ، اس تالاب میں آئرن کی بہت زیادہ مقدار ہے۔ اس کے علاوہ پانی میں پائی جانے والی گندھک ہے۔ جس کی وجہ سے پانی سبز رنگ کا دکھائی دیتا ہے۔

لہذاً یہ پانی نہانے اور تیرنے کے لیے بلکل بھی نہیں ہے۔ کیونکہ اس تالاب میں پائی جانے والی گیسیں انسانی کی جلد کو بہت جلدی متاثر کر سکتی ہے۔

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,046FansLike
2,986FollowersFollow
18,400SubscribersSubscribe

Latest Articles